اساتذہ کرام کے ساتھ بدتمیزی اور ان پر تشدد کی پرزور الفاظ میں مذمت کرتے ہیں، انچارج و اراکین کمیٹی اے پی ایم ایس او

اساتذہ کرام کے ساتھ بدتمیزی اور ان پر تشدد کی پرزور الفاظ میں مذمت کرتے ہیں، انچارج و اراکین کمیٹی اے پی ایم ایس او
گزشتہ ہفتے جب سے کراچی کے کالجز میں امتحانات کا آغاز ہوا اور ساتھ ہی تواتر سے اساتذہ کرام پر نامعلوم شرپسند و تعلیم دشمن عناصر کی جانب سے تشدد اور بدتمیزی کے واقعات ہونا شروع ہوگئے ہیں، اے پی ایم ایس او
ایسے علم دشمن عناصر اور نقل مافیا کو گرفتار کرکے قرار واقعی سزا دی جائے اور اساتذہ کرام و غیر تدریسی عملے کو مکمل تحفظ فراہم کیا
جائے، اے پی ایم ایس او کا قانون نافذ کرنے ولے اداروں سے پرزور مطالبہ
اگر اس طرح کے شرمناک واقعات کی روک تھام کیلئے فی الفور اقدامات نہ اٹھائے گئے تو اے پی ایم ایس او
پرامن احتجاج کا حق محفوظ رکھتی ہے، اے پی ایم ایس او

کراچی ۔۔۔ 09، مئی 2017ء
آل پاکستان متحدہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن کے نگراں انچارج و اراکین کمیٹی نے اپنے ایک مشترکہ بیان میں اساتذہ کرام کے ساتھ بدتمیزی اور ان پر تشدد کی پرزور الفاظ میں مذمت کی ہے۔ اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ گزشتہ ہفتے جب سے کراچی کے کالجز میں امتحانات کا آغاز ہوا اور ساتھ ہی تواتر سے اساتذہ کرام پر نامعلوم شرپسند و تعلیم دشمن عناصر کی جانب سے تشدد اور بدتمیزی کے واقعات ہونا شروع ہوگئے ہیں۔ قانون نافذ کرنے والے ادارے شہر بھر میں خصوصاً تعلیمی اداروں میں اساتذہ کرام اور غیرتدریسی عملے کی جان و مال کے تحفظ کو یقینی بنائے۔ انہوں نے کہا کہ اساتذہ کرام علم کے مینار ہیں اور ان کے ساتھ پیش آنے والے پرتشدد واقعات پر اے پی ایم ایس او کا ایک ایک کارکن ان کے ساتھ کھڑا ہے۔ اپنے مشترکہ بیان میں انہوں نے کہا کہ ہماری اطلاعات کے مطابق دو گروہ نے ایک نومولود جماعت کی پشت پناہی اور ملک دشمن عناصر کی ایماء پر کراچی کے تعلیمی اداروں میں قائم امتحانی مراکز میں نقل کا بازار گرم کر رکھا ہے اور جو استاد انہیں اس گھناؤنے اور علم دشمن عمل سے روکتا ہے انہیں سنگین نتائج کی دھمکیاں دی جاتی ہیں اور تشدد کا نشانہ بنایا جاتا ہے۔ اے پی ایم ایس او کی مرکزی کابینہ نے حکومت سندھ اور قانون نافذ کرنے والے اداروں سے پرزور مطالبہ کیا کہ ایسے علم دشمن عناصر اور نقل مافیا کو گرفتار کرکے قرار واقعی سزا دی جائے اور اساتذہ کرام و غیر تدریسی عملے کو مکمل تحفظ فراہم کیا جائے۔ اگر اس طرح کے شرمناک واقعات کی روک تھام کیلئے فی الفور اقدامات نہ اٹھائے گئے تو اے پی ایم ایس او پرامن احتجاج کا حق محفوظ رکھتی ہے۔

*****